LOADING

Type to search

سعودی وزارت حج و عمرہ ۔ رمضان 2021 میں عمرہ کی ادائیگی کے لئے نئے قواعد و ضوابط

Share

سعودی حکومت کی کوشش ہے کہ بیت ﷲ کی زیارت کو آنے والا ہر شخص مامون و محفوظ رہے ۔ اسی ضمن میں سعودی وزارت حج و عمرہ کی طرف سے خلیجی ممالک اور دنیا کے دیگر ممالک سے آنے والے عازمین عمرہ کے لئے نئے قواعد و ضوابط جاری کئے گئے ہیں۔  ذیل میں ان قواعد و ضوابط کی تفصیل موجود ہے۔

سعودی وزارت حج و عمرہ نے”توکلنا”  اور ”اعتمرنا“ نام سے دو ایپ جاری کیا ہے اور ڈیٹا اینڈ آرٹیفیشل انٹیلیجنس اتھارٹی کے تعاون سے ان ایپس کے ذریعہ ایک نیا اپ ڈیٹ جاری کیا ہے کہ عمرہ، زیارت اور مسجد الحرام اور مسجد نبوی میں نمازوں کی ادائیگی کے لئے اجازت نامے مقررہ ایپس کے ذریعہ جاری کئے جائیں گے۔

حج و عمرہ

دونوں ایپس کے مابین تکنیکی انضمام کا مقصد رمضان المبارک میں احتیاطی تدابیر کو لاگو کرتے ہوئے مسجد الحرام کی ممکنہ آپریشنل صلاحیت کو بڑھانا ہے اور وزارت کی طرف سے جاری کردہ احتیاطی تدابیر اور حفاظتی اقدامات کو بروئے کار لانے کی ضرورت پر عمل پیرا ہونا ہے۔  اس سلسلے میں متعلقہ حکومت کے ذریعہ مندرجہ ذیل ضابطے جاری کیے گئے ہیں:

پہلا:عمرہ، مسجد الحرام اور مسجد نبوی میں نمازوں کی ادائیگی اور زیارت کے لئے اجازت نامے یکم رمضان المبارک، 1442 هـ سے (توكلنا) ایپ میں موجود ویکسینیشن گروپس کے مطابق عالمی وبا کورونا وائرس (COVID-19) کے خلاف حفاظتی ٹیکے لگوانے والوں کو ہی دی جائیگی۔  ایپ کے مطابق صرف تین زمرے کے لوگوں کو عمرہ کی اجازت دی جائے گی۔ اول وہ جنہوں نے کورونا ویکسین کی دونوں خوراکیں لے لی ہیں۔ دوم وہ جن لوگوں نے چودہ دن قبل ویکسین کی پہلی خوراک لی ہے اور سوم وہ جو کورونا وائرس کا شکار ہونے کے بعد صحت یاب ہو چکے ہیں۔

دوسرا: عمرہ، نمازوں کی ادائیگی اور زیارت کے لئے اجازت نامے (توكلنا) اور (اعتمرنا) ایپس کے ذریعہ ہی دیے جائیں گے۔ ایسا اس لئے کیا گیا ہے تاکہ بیت ﷲ کی زیارت کو آنے والے رحمان کے مہمان کی خواہش کے مطابق، احتیاطی تدابیر کو بروئے کار لاتے ہوئے اور مسجد الحرام کی ممکنہ آپریشنل صلاحیت کو دیکھتے ہوئے، دستیاب وقت کی سلاٹ فراہم کی جا سکے۔

تیسرا: اجازت نامے کے صحیح ہونے کی تصدیق (توكلنا) ایپ کے ذریعہ کی جائیگی۔ اجازت نامے سے مستفید ہونے والے کو اس ایپ پر اپنا ایک اکاؤنٹ بنانا ہوگا اور جانچ کا عمل براہ راست اسی اکاؤنٹ سے ہوگا۔

عمرہ کے لئے نئے قواعد

وزارت نے احتیاطی تدابیر اور حفاظتی اقدامات پر عمل پیرا ہونے اور حکومت سے منظور شدہ پلیٹ فارم کے ذریعے اجازت نامے حاصل کرنے کی ضرورت پر بھی زور دیا ہے اور ساتھ ہی عازمین حج اور عمرہ سے یہ درخواست کیا ہے کہ وہ فرضی اشتہارات سے بچیں جن کا مقصد عازمین کا استحصال کرنا ہی ہوتا ہے۔

عمرہ سیکیورٹی: اجازت نامہ کے بغیرمسجد الحرام میں داخلہ ممنوع، خلاف ورزی کرنے والوں پر بھاری جرمانے کا فیصلہ

عمرہ سیکیورٹی فورسز کے کمانڈر میجر جنرل محمد الاحمدی نے ایک پریس کانفرنس میں اعلان کیا ، “ہم نے گزشتہ سال بڑی کامیابیاں حاصل کیں ،”۔ انہوں نے گزشتہ سال کی طرح اس سال بھی زائرین عمرہ کو سیکیورٹی فراہم کرنے میں بڑی کامیابیاں حاصل کرنے کے لئے ایک حفاظتی منصوبے کا انکشاف کیا کہ اجازت نامے کے بغیر مسجد الحرام تک رسائی ممکن نہیں ہے اور پورے مکہ مکرمہ میں ٹریفک اور سیکیورٹی کا معیار بہتر کرنے کے لئے جگہ جگہ چیک پوسٹیں قائم کی گئی ہیں اور انہیں افرادی قوت اور ضروری آلات سے لیس کیا گیا ہے۔

انہوں نے یہ بھی واضح کیا کہ عمرہ ادا کرنے والوں اور نمازیوں کے لئے راستوں کی نشاندہی کی گئی ہے تاکہ سماجی دوری کو یقینی بنایا جاسکے۔ اس کام کے لئے حکومت کی طرف سے جگہ جگہ سیکیورٹی اہلکار تعینات ہیں۔

انہوں نے پریس کانفرنس میں اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا کہ اجازت نامے کے بغیرعمرہ ادا کرنے یا مسجد الحرام میں داخل ہونے والے افراد کو بھاری مالی جرمانہ ادا کرنا ہوگا۔

رواں سال رمضان المبارک کے دوران محفوظ عمرہ پروگرام کے حوالے سے وزارت حج وعمرہ کی جانب سے جاری کردہ دیگر قواعد و ضوابط

  • رمضان المبارک کے مقدس مہینے میں ایک فرد کو صرف ایک ہی مرتبہ عمرہ ادا کرنے کی اجازت ہوگی۔
  • وزارت کی طرف سے جاری کردہ ایپ (اعتمرنا) کے ذریعہ اگر کسی نے پہلے ہی اجازت نامہ حاصل کر لیا ہے تو اس کے لئے پہلے اجازت نامہ کے میعاد کے مکمل ہونے سے قبل دوسرا اجازت نامہ حاصل کرنے کے لئے درخواست دینا ممکن نہیں ہوگا۔
  • مسجد الحرام میں فرض نماز کی ادائیگی کے لئے اجازت نامہ حاصل کرنے کے لئے عمرہ ادا کرنے والے حضرات درخواست دے سکتے ہیں۔ نمازیوں کو ایک وقت میں ایک دن کے لئے پانچ وقت کی نمازوں کے لئے اجازت نامے جاری کئے جائیں گے۔
  • ایک دن سے زیادہ کے لئے اجازت نامہ حاصل نہیں کیا جا سکتا۔ ہاں البتہ پہلے دن کے اجازت نامہ کی مدت پوری ہونے کے بعد دوسرے دن بھی اجازت نامہ حاصل کرنے کے لئے درخواست دینا ممکن ہوگا۔
  • عشاء کی نماز کے لئے جاری کردہ اجازت ناموں میں نماز تراویح کی ادائیگی کی اجازت بھی شامل ہوگی۔

مملکت سعودی عرب کے باہر سےآنے والے زائرین کی سلامتی کے لئے عمرہ کے لئے نئے قواعد

وزارت حج و عمرہ نے رمضان المبارک میں عمرہ کی ادائیگی کے لئے بیرون مملکت سے آنے والے عازمین کی آمد کے طریقہ کار اور ضابطے کا اعلان کیا ہے۔ وزارت کے مطابق عازمین کو عمرہ کی ادائیگی سے 6 گھنٹے قبل مکہ مکرمہ کے کیئر سینٹر پر جانا ہوگا جہاں وہ سعودی وزارت صحت سے منظور شدہ ویکسی نیشن گائیڈ لائنز کے مطابق اپنی کورونا ویکسی نیشن کا اسٹیٹس چیک کروائیں گے۔

وزارت کے مطابق کیئر سینٹر میں زائرین کو ایک بریسلیٹ دیا جائے گا جو انہیں لازمی طور پر پہننا ہوگا اس کے بعد انہیں الشبیکہ سینٹر جانے کی ہدایت کی جائے گی جہاں عازمین عمرہ اپنا بریسلیٹ دکھائیں گے اور اسکے ذریعے ان کے ڈیٹا اور اجازت نامے کی تصدیق کی جائے گی۔

وزارت نے اپنے بیانات میں زور دیکر کہا ہے کہ عازمین عمرہ اپنے لئے تعین کردہ وقت کی پابندی کریں اور کسی بھی صورت میں اس سے تجاوز نہ کریں۔

خادم حرمین شریفین شاہ سلمان نے مسجد الحرام اور مسجد نبوی میں نماز تراویح اورقیام لیل کو مختصر کرنے کا حکم بھی جاری کیا ہے۔ ایسا اس لئے کیا گیا ہے تاکہ عالمی وبا کرونا وائرس سے عازمین عمرہ  کی حفاظت کو یقینی بنایا جا سکے۔

مزید پڑھیے خلیج میں بہترین عمرہ خدمات فراہم کرنے والے کے ساتھ خاص گفتگو

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *