LOADING

Type to search

غیرملکی زائرین کے لیے دس اگست سے عمرہ کا دوبارہ آغاز

Share

دس اگست سے غیر ملکی زائرین کے لئے عمرہ کا دوبارہ آغاز ہونے جا رہا ہے۔ سعودی خبر رساں ایجنسی SPA  کے مطابق،  مسجد الحرام امور  کے نائب صدر سعد بن محمد  المحیمید کا کہنا ہے ‘مسجد الحرام غیر ملکی معتمرین کے استقبال کے لئے تیار ہے’

عالمی وبا کورونا وائرس کے خدشے کے پیش نظر بیرون ملک مسلمانوں کے لئے عمرے کی ادائیگی پر پابندی عائد کردی گئی تھی، تقریبا دو سال بعد یہ پابندی ختم کردی گئی ہے۔ اس دوران لاکھوں ایسے عازمین جن کو عمرہ ادا کرنے اور اللہ عز و جل کی قربت حاصل کرنے کی خواہش تھی، اس سعادت کو صرف دل سے یاد کر کے رہ گئے جو عمرہ ادا کرنے سے ملتی ہے۔ سعودی حکومت کے عمرہ کو دوبارہ آغاز کرنے کے فیصلہ سے عازمین میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے۔

اس سال کا حج سیزن کافی کامیاب رہا کیونکہ اس سیزن عالمی وبا کورونا کا کوئی کیس رپورٹ نہیں ہوا جو اپنے آپ میں ایک شاندار ریکارڈ ہے اور اسی کو دیکھتے ہوئے سعودی حکومت نے عمرہ کا دوبارہ آغاز کیا ہے۔

عمرہ کا دوبارہ آغاز

جو لوگ سعودی عرب میں مقیم ہیں انہیں تو حج سیزن کے فورا بعد 25 جولائی سے عمرہ ادا کرنے کی اجازت مل گئی ہے جبکہ دس اگست سے عمرہ ویزا کے لئے دنیا بھر کے عازمین درخواست دے سکیں گے اور عمرہ ادا کر سکیں گے۔

سعودی عرب کی قومی کمیٹی برائے حج و عمرہ کے رکن ہانی علی الامیری کا کہنا ہے کہ عالمی سطح پر 500 سے زائد عمرہ خدمات فراہم کرنے والے اور 6000 سے زائد عمرہ ایجنٹس عازمین کو اپنی خدمات فراہم کرانے کے لئے تیار ہیں اور آمدو رفت، رہائش وغیرہ کے انتظام فراہم کرنے کے لئے کوشاں ہیں۔

عمرہ ادا کرنے کی خواہش رکھنے والے عازمین منظور شدہ الیکٹرانک پلیٹ فارمز اور موبائل ایپس کے ذریعہ بآسانی عمرہ کی بکنگ کرواسکتے ہیں اور دستیاب پروازوں، ٹرانسپورٹیشن ، ہوٹلز اور کھانے پینے کے مکمل پروگرام خرید سکتے ہیں۔

ہانی علی الامیری کے مطابق عازمین عمرہ کا صحت مند ہونا ضروری ہے، سعودی حکومت کی جانب سے جاری کردہ قوانین کے مطابق عالمی وبا کورونا وائرس سے بچاؤ کے لئے ویکسین کے دونوں خوراک لینا اور 18 سال سے زیادہ عمر کا ہونا ہر عازمین عمرہ کے لئے لازمی ہے۔

الامیری نے مزید کہا کہ سعودی کمپنیاں رہائش، ٹرانسپورٹیشن اور دیگر خدمات کے پیکج فراہم کر رہی ہیں، بیرون ملک عازمین ان خدمات کو آن لائن حکومت سے منظور شدہ B2B اور B2C پلیٹ فارمز کے ذریعہ حاصل کرسکتے ہیں اور اپنی مرضی کے مطابق خدمات میں حذف و اضافہ بھی کر سکتے ہیں۔

بیرون ملک مسلمانوں کو عمرے کی اجازت،  لیکن شرائط کیا ہوں گی؟

سعودی وزارت حج و عمرہ نے بیرون ملک مسلمانوں کے لئے عمرہ کا دوبارہ آغاز کرتے ہوئے کچھ شرائط جاری کی ہے جن پر عمل عازمین کے لئے لازمی ہے۔ ذیل میں ان شرطوں کو ذکر کیا جا رہا ہے:

– وزارت کی جانب سے جاری کردہ حفاظتی قواعد و ضوابط کی پابندی کرنا تمام سروس فراہم کرنے والے، ایجنٹس اور عازمین کے لئے لازمی ہوگا۔

– صرف منظور شدہ سروس فراہم کرنے والوں کو عازمین کے لئے بکنگ کرنے یا سروس فراہم کرنے کی اجازت ہوگی۔

– صرف ان عازمین کو عمرے کی بکنگ کی اجازت ہوگی جن کی عمر 18 سال یا اس سے زیادہ ہوگی۔

– عمرے کے ویزے کے لیے صرف وہی افراد ردرخواست دے سکتے ہیں جو فائز، موڈرنا، آسٹرازینیکا یا جانسن اینڈ جانسن کی تیار کردہ ویکسین میں سے کسی بھی ایک ویکسین کی دونوں خوراکوں کے ساتھ، کرونا کی ویکسین مکمل طور پر لگوا چکے ہوں۔

– عازمین سے وزارت نے یہ درخواست کی ہے کہ وہ ویزا کے لئے درخواست دینے سے پہلے اپنے ملکوں میں کسی بہترین اور بھروسہ مند طبی مراکز کی مدد حاصل کرکے اپنی صحت کی مکمل جانچ کروائیں تاکہ اس بات کی تصدیق ہو سکے وہ بالکل صحت مند ہیں اور انہیں عمرہ ویزا جاری کیا جا سکتا ہے۔

– عازمین کے لئے یہ جاننا مناسب ہوگا کہ وزارت کی جانب سے نماز ادا کرنے اور طواف کرنے کے دوران سماجی دوری بنائے رکھنے کے لئے مقامات خاص کردیے گئے ہیں جن کے مطابق انہیں عبادت کرنی ہوگی۔

– عازمین کو چاہیے کہ وہ طواف کرنے اور نماز ادا کرنے کے دوران فرش پر بنے نشانات کی پیروی کریں۔

– پاکستان سمیت بارہ ممالک سے آنے والے عازمین کو کسی تیسرے ملک میں 14 روزہ قرنطینہ کے بعد سعودی عرب میں داخلے کی اجازت دی جائے گی۔ پاکستان کے علاوہ بارہ ممالک مندرجہ ذیل ہیں:

ہندوستان، انڈونیشیا، مصر، ترکی، ارجنٹائن، برازیل، جنوبی افریقہ، متحدہ عرب امارات، ایتھوپیا، ویت نام، افغانستان اور لبنان۔  ان کے علاوہ تمام ممالک کے عازمین کو کسی تیسرے ملک میں قرنطینہ کی ضرورت نہیں پڑے گی بلکہ انہیں مملکت سعودی عرب میں ڈائریکٹ داخلے کی اجازت ہوگی۔

عمرہ می کی مکمل ٹیم اللہ عز و جل سے دعا گو ہے کہ وہ آپ کے عمرہ کو قبول فرمائے اور دنیا اور آخرت کی تمام بھلائیوں سے نواز دے۔ آمین۔

حج 2021 کے بارے میں مزید جانیے کہ کس سختی کے ساتھ سعودی حکومت نے احتیاطی تدابیر پر عمل کیا۔ آپ، عمرہ عازمین، کو بھی ان حفاظتی تدابیر پر عمل کرنا ہوگا تا کہ حج کی طرح غیر ملکی زائرین کے لئے عمرہ کا سیزن بھی کامیاب رہے اور عالمی وبا کورونا جیسی بیماری سے بیت اللہ کی زیارت کو آنے والا ہر شخص محفوظ رہے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *